0

کالعدم مذہبی تنظیم پر پابندی ہٹانے کا کوئی وعدہ نہیں کیا ، پیر نورالحق قادری نے دوٹوک انداز میں بتادیا

وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری فائل فوٹو ( سمیعز نیوز )

وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہاہے کہ کالعدم مذہبی تنظیم کے مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ فرانس کے سفیر کو پاکستان سے نکالا جائے، ہم نے یہی کہا کہ اس مسئلے کے بہت سے  اثرات سامنے  آئیں گے،حکومت یہ سب کچھ اکیلے نہیں کر سکتی، معاملے کو پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا،کالعدم  ٹی ایل پی  پرعائد   پابندی ہٹانے کا کوئی وعدہ نہیں کیا ۔ وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہا کہ مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ فرانس کے سفیر کو پاکستان سے نکالا جائے ہم نے یہی کہا کہ اس مسئلے سے بہت اثرات آئیں گے، حکومت یہ سب کچھ اکیلے نہیں کر سکتی معاملے کو پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا، آپ کا موقف قانون کے سامنے لائیں گے یہی دونوں کے لئے قابل قبول تھا، تمام جماعتوں کو اس معاملے پر سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا چاہیے، کسی ایک پارٹی کو نشانہ نہیں بنانا چاہیے، اس مسئلے پر توجہ سے کام کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ناموس رسالتﷺ قرارداد  پر اپوزیشن کو بھی اعتماد میں لینا چاہیے تھا،مظاہرین کا یہی مطالبہ تھا کہ اس معاملے کو پارلیمنٹ میں لایا جائے جو ہم نے پورا کیا، ٹی ایل پی سے پابندی ہٹانے کا کوئی وعدہ نہیں کیا، یہ ایک قانونی معاملہ ہے، اس پر ٹی ایل پی اپیل دائر کرے۔ 


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں