0

شوگر فیکٹریز کنٹرول ایکٹ میں غیر ضروری ترامیم ختم کرنے کا اعلان

لاہور وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے پاکستان کسان اتحاد کے مرکزی صدر خالد کھوکھر نے ملاقات کی ، ملاقات میں  شوگر فیکٹریز کنٹرول ایکٹ میں ترامیم اور کسانوں خصوصاً گنے کے کاشتکاروں کی فلاح و بہبود کیلئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے شوگر فیکٹریز کنٹرول ایکٹ میں غیر ضروری ترامیم ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے شوگر فیکٹریز کنٹرول ایکٹ کو کسان دوست بنانے کی یقین دہانی کرائی ۔ خالد کھوکھر نے شوگر فیکٹریز کنٹرول ایکٹ میں غیر ضروری ترامیم کے خاتمے کی یقین دہانی پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار کا شکریہ ادا کیا۔

خالد کھوکھر نے کسانوں کی فلاح و بہبود اور گنے کے کاشتکاروں کے حقوق کے تحفظ کیلئے وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے بروقت اقدامات کو سراہا۔ اس موقع پر سردار عثمان بزدار نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم اور کسان کی محنت سے رواں برس گندم سمیت دیگر فصلوں کی پیداوار میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے، حکومت کے کسان دوست اقدامات سے کاشتکار کو اس کی محنت کا معاوضہ ملا ہے، ماضی میں گنے کا کاشتکار سڑکوں پر احتجاج کرتا رہا لیکن اسے محنت کا معاوضہ نہیں ملا۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ سابق دورمیں گنے کے کاشتکاروں کے ساتھ بے پناہ زیادتی روا رکھی گئی، غریب کسان طاقتور مافیا کے ہاتھوں یرغمال بنا رہا، تحریک انصاف کی حکومت نے کاشتکار کو اس کا حق واپس کیا ہے۔ گنے کے کاشتکاروں کو ان کی محنت کا پورا معاوضہ ملا۔

سردار عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ آئندہ موسم میں بھی گنے کے کاشتکاروں کو ان کی محنت کا پورا ثمر دیں گے، کاشتکاروں کے حقوق کا پہلے بھی تحفظ کیا ہے، آئندہ بھی کریں گے، کاشتکار میرے بھائی ہیں، ان کے حقوق کا تحفظ میری ذمہ داری ہے، حق تلفی نہیں ہونے دیں گے بلکہ مزید سہولتیں فراہم کریں گے، 2021 زرعی پیداوار میں اضافے کا سال ہوگا۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے کاشتکاروں کے مسائل حل کرنے کیلئے جامع ورکنگ پیپر تیار کرنے کی ہدایت جاری کر دی جبکہ انسداد منہ کھر ویکسین مقامی طورپر تیار کرنے کیلئے اقدامات کا حکم دیا ۔ محکمہ زراعت میں انتہائی ضروری افرادی قوت کی کمی پوری کرنے کیلئے ایڈہاک بھرتی کا اصولی فیصلہ بھی کیا گیا جبکہ بھل صفائی کی بروقت تکمیل یقینی بنانے کا حکم صادر کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی،صوبائی وزیراوقاف سید سعید الحسن شاہ،صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر اختر ملک،مشیر حنیف پتافی،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ،سیکرٹری زراعت،سیکرٹری خوراک اور متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں