0

بھارت میں زندگی کے ساتھ ساتھ انسانیت بھی دم توڑ گئی, کورونا کے باعث ہلاک ہونے والی خاتوں کے پاس اس کا 18 ماہ کا بچہ دو دن تک بھوکا پیاسا بیٹھا رہا اور کوئی مدد کو نہ آیا.

بھارت میں کورونا کے خوف کی وجہ سے 18مہینے کا بچہ ماں کی لاش کے پاس 2 دن تک بغیر کھائے پیئے بیٹھا رہا۔

بھارتی شہر پونے میں کورونا کے خوف کی وجہ سے کوئی بھی شخص متاثرہ خاندان کی مدد کو تیار نہیں تھا جس پر مالک مکان نے پولیس کو فون پر اطلاع دی جس پر اہلکاروں نے پہنچ کر گھر میں ماں کی لاش کے پاس ہی بیٹے کو بیٹھا ہوا پایا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق شہری کورونا کے خوف کی وجہ سے بچے کو اٹھانے کو بھی تیار نہ تھے۔تاہم دو خاتون پولیس اہلکاروں نے بچے کو غذا فراہم کی۔

خاتون پولیس اہلکار نے بتایا کہ بچہ بہت بھوکا تھا اس نے فوراً ہی دودھ پیا جبکہ اس کو تھوڑا بخار بھی تھا۔بعداذاں بچے کا سرکاری اسپتال سے کورونا ٹیسٹ کرایا گیا جوکہ منفی آیا ہے۔

پولیس حکام کے مطابق مرنے والی خاتون کا شوہر کام کے سلسلے میں ریاست اترپردیش گیا ہوا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بچے کی ماں کا پوسٹمارٹم ہونے کے بعد موت کی وجہ سامنے آئے گی


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں